Blog Posts

Tib e Ahlebait Head Office

I am very thankful to those who love and support me. With the supports of my viewers, I am able to send the message of Aima Ahlebait a.s. Tib-e-Ahlebait is based on Aima a.s authentic Ahadees in  which curing of all types of diseases are present except death. After long research on books, I am able to share knowledge about Tib-e-Ahlebait a.s with you. I have done my Tib and medical course from Alia university Holland. I utilise many resources like books and lectures of ayatullah Tibrizan and Allama Jan Ali Kazmi and other tib’s books for research.

Tib e Ahlebait Head Office in Islamabad Ghori Town Phase 4C.Contact number 03129009247

Tib e Ahlebait website ahlebaitstore.com

Tib e Ahlebait Books

🌹طب اہلبیت فری کتابیں فری ڈانلوڈ کریں یا آن لائن پڑھیں۔Tib e Ahlebait Book

🍀کتابوں کی فہرست
1️⃣📚دل کی بیماریاں
2️⃣📚دماغی و اعصابی بیماریاں و سردرد
3️⃣📚بچوں کی بیماریاں
4️⃣📚وبائی امراض
5️⃣📚جلدی امراض و چہرے کی خوبصورتی
6️⃣📚مرادانہ امراض
7️⃣📚خواتین کی بیماریاں
8️⃣📚ہڈیاں و جوڑوں کی بیماریاں
9️⃣📚طب اہلبیت
🔟📚نفسیاتی امراض و ڈپریشن
11📚طب اہلبیت ع جلد اول
12📚جگر و گردوں کی بیماریاں
13📚معدہ و ہاضمہ کی بیماریاں
14📚آنکھ و کان کی بیماریاں
15📚دانت ،گلے اور منہ کی بیماریاں
16📚سانس کی بیماریاں،بخار و زخم
17📚کینسر،گلٹیاں و مزاج شناسی

8️⃣1️⃣📚کمزوری و سُستی،خون کی بیماریاں اور خون کی کمی
9️⃣1️⃣طب اہلبیت
0️⃣2️⃣طب اہلبیت ع جلد اول

👉ایپ ڈانلوڈ کریں اور کتابیں فری میں ڈانلوڈ کریں
♦️دئیے گے لنکس میں کلک کریں یا. پھر Play store میں جا کر ahlebaitstore.comلکھیں اور ایپ ڈانلوڈ کریں۔۔
👉کتابیں ایپ میں ڈانلوڈ بھی کر سکتے ہیں اور آن لائن پڑھ بھی سکتے ہیں
👉ادویات کی معلومات اور آن لائن بکنگ بھی کر سکتے ہیں
۔دوسروں کو بھی شئیر کریں
👉کتابیں ٹیلی گرام میں بھی موجود ہیں۔۔
📞03445013241
ahlebaitstore@gmail.com
👉Join Telegram
http://t.me/joinchat/KiqAThYT2wrZEJccU03I4g
👉Join Facebook Page
https://www.facebook.com/groups/3320561074684660/
👉Like Facebook.Online store
https://www.facebook.com/Tib-e-Ahlebait-Online-store-108124240862215/
🌹Web site http://ahlebaitstore.com
👉Download Mobile App
http://tiny.cc/ahlebaitstore

دعا

  • بسم اللہ الرحمن الرحیم
  • صحفیہ سجادیہ ساتویں دعا ۔
  •  **مشکلات کے وقت کی دعا*
  • وكَانَ مِنْ دُعَائِه عَلَيْه السَّلَامُ إِذَا عَرَضَتْ لَه مُهِمَّةٌ أَوْ نَزَلَتْ بِه ، مُلِمَّةٌ وعِنْدَ الْكَرْبِ :
  • ➊اے وہ جس کے ذریعہ مصیبتو ں کے بندھن کھل جاتے ہیں۔ اے وہ جس کے باعث سختیوں کی باڑھ کند ہوجاتی ہے۔ اے وہ جس سے ( تنگی و دشواری سے ) وسعت و فراخی کی آسائش کی طرف نکال لے جانے کی التجا کی جاتی ہے:
  • *يَا مَنْ تُحَلُّ بِه عُقَدُ الْمَكَارِه ، ويَا مَنْ يَفْثَأُ بِه حَدُّ الشَّدَائِدِ ، ويَا مَنْ يُلْتَمَسُ مِنْه الْمَخْرَجُ إِلَى رَوْحِ الْفَرَجِ .*
  • ➋۔ تو وہ ہے کہ تیری قدرت کے آگے دشواریاں آسان ہو جاتیں ہیں ، تیرے لطف سے سلسلۂ اسباب برقرار رہتا ہے اور تیری قدرت سے قضا کا نفاذ ہوتا ہے
  • *ذَلَّتْ لِقُدْرَتِكَ الصِّعَابُ ، وتَسَبَّبَتْ بِلُطْفِكَ الأَسْبَابُ ، وجَرَى بِقُدرَتِكَ الْقَضَاءُ ،*
  • ➌۔ اور تمام چیزیں تیرے ارادہ کے رخ پر گامزن ہیں ۔ وہ بن کہے تیری مشیت کی پابند اور بن روکے خود ہی تیرے ارادہ سے رکی ہوئی ہیں۔
  • *ومَضَتْ عَلَى إِرَادَتِكَ الأَشْيَاءُ فَهِيَ بِمَشِيَّتِكَ دُونَ قَوْلِكَ مُؤْتَمِرَةٌ ، وبِإِرَادَتِكَ دُونَ نَهْيِكَ مُنْزَجِرَةٌ .*
  • ➍ مشکلات میں تجھے ہی پکارا جاتا ہے اور بلیات میں تو ہی جائے پناہ ہے۔ ان میں سے کوئی مصیبت ٹل نہیں سکتی مگر جسے تو ٹال دے اور کوئی مشکل حل نہیں ہوسکتی مگر جسے تو حل کرے ۔
  • *أَنْتَ الْمَدْعُوُّ لِلْمُهِمَّاتِ ، وأَنْتَ الْمَفْزَعُ فِي الْمُلِمَّاتِ ، لَا يَنْدَفِعُ مِنْهَا إِلَّا مَا دَفَعْتَ ، ولَا يَنْكَشِفُ مِنْهَا إِلَّا مَا كَشَفْتَ*
  • ➎ پروردگار ! مجھ پر ایک ایسی مصیبت نازل ہوئی ہے جس کی سنگینی نے مجھے گرانبار کردیا ہے اور ایک ایسی آفت آپڑی ہے جس سے میری قوت برداشت عاجز ہوچکی ہے۔
  • *وقَدْ نَزَلَ بِي يَا رَبِّ مَا قَدْ تَكَأَّدَنِي ثِقْلُه ، وأَلَمَّ بِي مَا قَدْ بَهَظَنِي حَمْلُه.*
  • ➏ تو نے اپنی قدرت سے اس مصیبت کو مجھ پر وارد کیا ہے اور اپنے اقتدار سے میری طرف متوجہ کیا ہے۔
  • *وبِقُدْرَتِكَ أَوْرَدْتَه عَلَيَّ وبِسُلْطَانِكَ وَجَّهْتَه إِلَيَّ .*
  • ➐ تو جسے تو وارد کرے اسے کوئی ہٹانے والااور جسے تو متوجہ کرے اسے کوئی پلٹانے والا نہیں
  • *فَلَا مُصْدِرَ لِمَا أَوْرَدْتَ ، ولَا صَارِفَ لِمَا وَجَّهْتَ ،*
  • اور جسے تو بند کرے اسے کوئی کھولنے والا اور جسے تو کھولے اسے کوئی بند کرنے والا نہیں۔
  • *ولَا فَاتِحَ لِمَا أَغْلَقْتَ ، ولَا مُغْلِقَ لِمَا فَتَحْتَ ،*
  • اور جسے تودشوار بنائے اسے کوئی آسان کرنے والا اور جسے تو نظر انداز کرے اسے کوئی مدد دینے والا نہیں ہے۔
  • *ولَا مُيَسِّرَ لِمَا عَسَّرْتَ ، ولَا نَاصِرَ لِمَنْ خَذَلْتَ .*
  • *فصل علی محمد و آله*
  • پس رحمت نازل فرما محمد اور ان کی آل پر
  • ➑۔ اور اپنی کرم نوازی سے اے میرے پالنے والے میرے لیے آسائش کا دروازہ کھول دے اور اپنی قوت و توانائی سے غم و اندوہ کا زور توڑ دے
  • *وافْتَحْ لِي يَا رَبِّ بَابَ الْفَرَجِ بِطَوْلِكَ ، واكْسِرْ عَنِّي سُلْطَانَ الْهَمِّ بِحَوْلِكَ،*
  • اور میری حاجت کو پورا کرکے شیرینی احسان سے مجھے لذت اندوز کر اور اپنی طرف سے رحمت اور خوشگوار آسودگی مرحمت فرما
  • *وأَنِلْنِي حُسْنَ النَّظَرِ فِيمَا شَكَوْتُ ، وأَذِقْنِي حَلَاوَةَ الصُّنْعِ فِيمَا سَأَلْتُ ،*
  • اور میرے لیے اپنے لطف خاص سے جلد چھٹکارے کی راہ پیدا کر
  • *وهَبْ لِي مِنْ لَدُنْكَ رَحْمَةً وفَرَجاً هَنِيئاً ، واجْعَلْ لِي مِنْ عِنْدِكَ مَخْرَجاً وَحِيّاً .*
  • ➒ اور اس غم و اندوہ کی وجہ سے اپنے فرائض کی پابندی اور مستحبات کی بجاآوری سے غفلت میں نہ ڈال دے ۔
  • *ولَا تَشْغَلْنِي بِالاهْتِمَامِ عَنْ تَعَاهُدِ فُرُوضِكَ ، واسْتِعْمَالِ سُنَّتِكَ .*
  • ➓ کیونکہ میں اس مصیبت کے ہاتھوں تنگ آ چکا ہوں اور اس حادثہ کے ٹوٹ پڑنے سے دل رنج و اندوہ سے بھر گیا ہے۔
  • *فَقَدْ ضِقْتُ لِمَا نَزَلَ بِي يَا رَبِّ ذَرْعاً ، وامْتَلأْتُ بِحَمْلِ مَا حَدَثَ عَلَيَّ هَمّاً ،*
  • جس مصیبت میں مبتلا ہوں اس کے دور کرنے اور جس بلا میں پھنسا ہوا ہوں اس سے نکالنے پر تو ہی قادر ہے، اپنی قدرت کو میرے حق میں کار فرما کر ۔
  • اگرچہ تیری طرف سے میں اس کا سزا وار نہ قرار پا سکوں ۔ اے عرش عظیم کے مالک۔
  • *وأَنْتَ الْقَادِرُ عَلَى كَشْفِ مَا مُنِيتُ بِه ، ودَفْعِ مَا وَقَعْتُ فِيه ،فَافْعَلْ بِي ذَلِكَ وإِنْ لَمْ أَسْتَوْجِبْه مِنْكَ ، يَا ذَا الْعَرْشِ
  • دوا منگوانے کے لئے رابطہ نمبر
  • 03445013241
  • +989384313709
  • http://ahlebaitstore.com|
  • http://tibahlebait.com/
  • https://chat.whatsapp.com/FxrR0p1cxUf9rB17aLHknR

🕋 **مشکلات کے وقت کی دعا🕋*

صحفیہ سجادیہ ساتویں دعا ۔

بسم اللہ الرحمن الرحیم

صحفیہ سجادیہ ساتویں دعا ۔

 **مشکلات کے وقت کی دعا*

وكَانَ مِنْ دُعَائِه عَلَيْه السَّلَامُ إِذَا عَرَضَتْ لَه مُهِمَّةٌ أَوْ نَزَلَتْ بِه ، مُلِمَّةٌ وعِنْدَ الْكَرْبِ :

➊اے وہ جس کے ذریعہ مصیبتو ں کے بندھن کھل جاتے ہیں۔ اے وہ جس کے باعث سختیوں کی باڑھ کند ہوجاتی ہے۔ اے وہ جس سے ( تنگی و دشواری سے ) وسعت و فراخی کی آسائش کی طرف نکال لے جانے کی التجا کی جاتی ہے:

*يَا مَنْ تُحَلُّ بِه عُقَدُ الْمَكَارِه ، ويَا مَنْ يَفْثَأُ بِه حَدُّ الشَّدَائِدِ ، ويَا مَنْ يُلْتَمَسُ مِنْه الْمَخْرَجُ إِلَى رَوْحِ الْفَرَجِ .*

➋۔ تو وہ ہے کہ تیری قدرت کے آگے دشواریاں آسان ہو جاتیں ہیں ، تیرے لطف سے سلسلۂ اسباب برقرار رہتا ہے اور تیری قدرت سے قضا کا نفاذ ہوتا ہے

*ذَلَّتْ لِقُدْرَتِكَ الصِّعَابُ ، وتَسَبَّبَتْ بِلُطْفِكَ الأَسْبَابُ ، وجَرَى بِقُدرَتِكَ الْقَضَاءُ ،*

➌۔ اور تمام چیزیں تیرے ارادہ کے رخ پر گامزن ہیں ۔ وہ بن کہے تیری مشیت کی پابند اور بن روکے خود ہی تیرے ارادہ سے رکی ہوئی ہیں۔

*ومَضَتْ عَلَى إِرَادَتِكَ الأَشْيَاءُ فَهِيَ بِمَشِيَّتِكَ دُونَ قَوْلِكَ مُؤْتَمِرَةٌ ، وبِإِرَادَتِكَ دُونَ نَهْيِكَ مُنْزَجِرَةٌ .*

➍ مشکلات میں تجھے ہی پکارا جاتا ہے اور بلیات میں تو ہی جائے پناہ ہے۔ ان میں سے کوئی مصیبت ٹل نہیں سکتی مگر جسے تو ٹال دے اور کوئی مشکل حل نہیں ہوسکتی مگر جسے تو حل کرے ۔

*أَنْتَ الْمَدْعُوُّ لِلْمُهِمَّاتِ ، وأَنْتَ الْمَفْزَعُ فِي الْمُلِمَّاتِ ، لَا يَنْدَفِعُ مِنْهَا إِلَّا مَا دَفَعْتَ ، ولَا يَنْكَشِفُ مِنْهَا إِلَّا مَا كَشَفْتَ*

➎ پروردگار ! مجھ پر ایک ایسی مصیبت نازل ہوئی ہے جس کی سنگینی نے مجھے گرانبار کردیا ہے اور ایک ایسی آفت آپڑی ہے جس سے میری قوت برداشت عاجز ہوچکی ہے۔

*وقَدْ نَزَلَ بِي يَا رَبِّ مَا قَدْ تَكَأَّدَنِي ثِقْلُه ، وأَلَمَّ بِي مَا قَدْ بَهَظَنِي حَمْلُه.*

➏ تو نے اپنی قدرت سے اس مصیبت کو مجھ پر وارد کیا ہے اور اپنے اقتدار سے میری طرف متوجہ کیا ہے۔

*وبِقُدْرَتِكَ أَوْرَدْتَه عَلَيَّ وبِسُلْطَانِكَ وَجَّهْتَه إِلَيَّ .*

➐ تو جسے تو وارد کرے اسے کوئی ہٹانے والااور جسے تو متوجہ کرے اسے کوئی پلٹانے والا نہیں

*فَلَا مُصْدِرَ لِمَا أَوْرَدْتَ ، ولَا صَارِفَ لِمَا وَجَّهْتَ ،*

اور جسے تو بند کرے اسے کوئی کھولنے والا اور جسے تو کھولے اسے کوئی بند کرنے والا نہیں۔

*ولَا فَاتِحَ لِمَا أَغْلَقْتَ ، ولَا مُغْلِقَ لِمَا فَتَحْتَ ،*

اور جسے تودشوار بنائے اسے کوئی آسان کرنے والا اور جسے تو نظر انداز کرے اسے کوئی مدد دینے والا نہیں ہے۔

*ولَا مُيَسِّرَ لِمَا عَسَّرْتَ ، ولَا نَاصِرَ لِمَنْ خَذَلْتَ .*

*فصل علی محمد و آله*

پس رحمت نازل فرما محمد اور ان کی آل پر

➑۔ اور اپنی کرم نوازی سے اے میرے پالنے والے میرے لیے آسائش کا دروازہ کھول دے اور اپنی قوت و توانائی سے غم و اندوہ کا زور توڑ دے

*وافْتَحْ لِي يَا رَبِّ بَابَ الْفَرَجِ بِطَوْلِكَ ، واكْسِرْ عَنِّي سُلْطَانَ الْهَمِّ بِحَوْلِكَ،*

اور میری حاجت کو پورا کرکے شیرینی احسان سے مجھے لذت اندوز کر اور اپنی طرف سے رحمت اور خوشگوار آسودگی مرحمت فرما

*وأَنِلْنِي حُسْنَ النَّظَرِ فِيمَا شَكَوْتُ ، وأَذِقْنِي حَلَاوَةَ الصُّنْعِ فِيمَا سَأَلْتُ ،*

اور میرے لیے اپنے لطف خاص سے جلد چھٹکارے کی راہ پیدا کر

*وهَبْ لِي مِنْ لَدُنْكَ رَحْمَةً وفَرَجاً هَنِيئاً ، واجْعَلْ لِي مِنْ عِنْدِكَ مَخْرَجاً وَحِيّاً .*

➒ اور اس غم و اندوہ کی وجہ سے اپنے فرائض کی پابندی اور مستحبات کی بجاآوری سے غفلت میں نہ ڈال دے ۔

*ولَا تَشْغَلْنِي بِالاهْتِمَامِ عَنْ تَعَاهُدِ فُرُوضِكَ ، واسْتِعْمَالِ سُنَّتِكَ .*

➓ کیونکہ میں اس مصیبت کے ہاتھوں تنگ آ چکا ہوں اور اس حادثہ کے ٹوٹ پڑنے سے دل رنج و اندوہ سے بھر گیا ہے۔

*فَقَدْ ضِقْتُ لِمَا نَزَلَ بِي يَا رَبِّ ذَرْعاً ، وامْتَلأْتُ بِحَمْلِ مَا حَدَثَ عَلَيَّ هَمّاً ،*

جس مصیبت میں مبتلا ہوں اس کے دور کرنے اور جس بلا میں پھنسا ہوا ہوں اس سے نکالنے پر تو ہی قادر ہے، اپنی قدرت کو میرے حق میں کار فرما کر ۔

اگرچہ تیری طرف سے میں اس کا سزا وار نہ قرار پا سکوں ۔ اے عرش عظیم کے مالک۔

*وأَنْتَ الْقَادِرُ عَلَى كَشْفِ مَا مُنِيتُ بِه ، ودَفْعِ مَا وَقَعْتُ فِيه ،فَافْعَلْ بِي ذَلِكَ وإِنْ لَمْ أَسْتَوْجِبْه

مِنْكَ ، يَا ذَا الْعَرْشِ



دوا منگوانے کے لئے رابطہ نمبر

03445013241

+989384313709



http://ahlebaitstore.com|

Tibahlebait

https://chat.whatsapp.com/FxrR0p1cxUf9rB17aLHknR

  1.  

تمام مشکلات کے لئے دعا

  • بسم اللہ الرحمن الرحیم
  • صحفیہ سجادیہ ساتویں دعا ۔

  • 🕋 **مشکلات کے وقت کی دعا🕋*

  • وكَانَ مِنْ دُعَائِه عَلَيْه السَّلَامُ إِذَا عَرَضَتْ لَه مُهِمَّةٌ أَوْ نَزَلَتْ بِه ، مُلِمَّةٌ وعِنْدَ الْكَرْبِ :
  • ➊اے وہ جس کے ذریعہ مصیبتو ں کے بندھن کھل جاتے ہیں۔ اے وہ جس کے باعث سختیوں کی باڑھ کند ہوجاتی ہے۔ اے وہ جس سے ( تنگی و دشواری سے ) وسعت و فراخی کی آسائش کی طرف نکال لے جانے کی التجا کی جاتی ہے:
  • *يَا مَنْ تُحَلُّ بِه عُقَدُ الْمَكَارِه ، ويَا مَنْ يَفْثَأُ بِه حَدُّ الشَّدَائِدِ ، ويَا مَنْ يُلْتَمَسُ مِنْه الْمَخْرَجُ إِلَى رَوْحِ الْفَرَجِ .*
  • ➋۔ تو وہ ہے کہ تیری قدرت کے آگے دشواریاں آسان ہو جاتیں ہیں ، تیرے لطف سے سلسلۂ اسباب برقرار رہتا ہے اور تیری قدرت سے قضا کا نفاذ ہوتا ہے
  • *ذَلَّتْ لِقُدْرَتِكَ الصِّعَابُ ، وتَسَبَّبَتْ بِلُطْفِكَ الأَسْبَابُ ، وجَرَى بِقُدرَتِكَ الْقَضَاءُ ،*
  • ➌۔ اور تمام چیزیں تیرے ارادہ کے رخ پر گامزن ہیں ۔ وہ بن کہے تیری مشیت کی پابند اور بن روکے خود ہی تیرے ارادہ سے رکی ہوئی ہیں۔
  • *ومَضَتْ عَلَى إِرَادَتِكَ الأَشْيَاءُ فَهِيَ بِمَشِيَّتِكَ دُونَ قَوْلِكَ مُؤْتَمِرَةٌ ، وبِإِرَادَتِكَ دُونَ نَهْيِكَ مُنْزَجِرَةٌ .*
  • ➍ مشکلات میں تجھے ہی پکارا جاتا ہے اور بلیات میں تو ہی جائے پناہ ہے۔ ان میں سے کوئی مصیبت ٹل نہیں سکتی مگر جسے تو ٹال دے اور کوئی مشکل حل نہیں ہوسکتی مگر جسے تو حل کرے ۔
  • *أَنْتَ الْمَدْعُوُّ لِلْمُهِمَّاتِ ، وأَنْتَ الْمَفْزَعُ فِي الْمُلِمَّاتِ ، لَا يَنْدَفِعُ مِنْهَا إِلَّا مَا دَفَعْتَ ، ولَا يَنْكَشِفُ مِنْهَا إِلَّا مَا كَشَفْتَ*
  • ➎ پروردگار ! مجھ پر ایک ایسی مصیبت نازل ہوئی ہے جس کی سنگینی نے مجھے گرانبار کردیا ہے اور ایک ایسی آفت آپڑی ہے جس سے میری قوت برداشت عاجز ہوچکی ہے۔
  • *وقَدْ نَزَلَ بِي يَا رَبِّ مَا قَدْ تَكَأَّدَنِي ثِقْلُه ، وأَلَمَّ بِي مَا قَدْ بَهَظَنِي حَمْلُه.*
  • ➏ تو نے اپنی قدرت سے اس مصیبت کو مجھ پر وارد کیا ہے اور اپنے اقتدار سے میری طرف متوجہ کیا ہے۔
  • *وبِقُدْرَتِكَ أَوْرَدْتَه عَلَيَّ وبِسُلْطَانِكَ وَجَّهْتَه إِلَيَّ .*
  • ➐ تو جسے تو وارد کرے اسے کوئی ہٹانے والااور جسے تو متوجہ کرے اسے کوئی پلٹانے والا نہیں
  • *فَلَا مُصْدِرَ لِمَا أَوْرَدْتَ ، ولَا صَارِفَ لِمَا وَجَّهْتَ ،*
  • اور جسے تو بند کرے اسے کوئی کھولنے والا اور جسے تو کھولے اسے کوئی بند کرنے والا نہیں۔
  • *ولَا فَاتِحَ لِمَا أَغْلَقْتَ ، ولَا مُغْلِقَ لِمَا فَتَحْتَ ،*
  • اور جسے تودشوار بنائے اسے کوئی آسان کرنے والا اور جسے تو نظر انداز کرے اسے کوئی مدد دینے والا نہیں ہے۔
  • *ولَا مُيَسِّرَ لِمَا عَسَّرْتَ ، ولَا نَاصِرَ لِمَنْ خَذَلْتَ .*
  • *فصل علی محمد و آله*
  • پس رحمت نازل فرما محمد اور ان کی آل پر
  • ➑۔ اور اپنی کرم نوازی سے اے میرے پالنے والے میرے لیے آسائش کا دروازہ کھول دے اور اپنی قوت و توانائی سے غم و اندوہ کا زور توڑ دے
  • *وافْتَحْ لِي يَا رَبِّ بَابَ الْفَرَجِ بِطَوْلِكَ ، واكْسِرْ عَنِّي سُلْطَانَ الْهَمِّ بِحَوْلِكَ،*
  • اور میری حاجت کو پورا کرکے شیرینی احسان سے مجھے لذت اندوز کر اور اپنی طرف سے رحمت اور خوشگوار آسودگی مرحمت فرما
  • *وأَنِلْنِي حُسْنَ النَّظَرِ فِيمَا شَكَوْتُ ، وأَذِقْنِي حَلَاوَةَ الصُّنْعِ فِيمَا سَأَلْتُ ،*
  • اور میرے لیے اپنے لطف خاص سے جلد چھٹکارے کی راہ پیدا کر
  • *وهَبْ لِي مِنْ لَدُنْكَ رَحْمَةً وفَرَجاً هَنِيئاً ، واجْعَلْ لِي مِنْ عِنْدِكَ مَخْرَجاً وَحِيّاً .*
  • ➒ اور اس غم و اندوہ کی وجہ سے اپنے فرائض کی پابندی اور مستحبات کی بجاآوری سے غفلت میں نہ ڈال دے ۔
  • *ولَا تَشْغَلْنِي بِالاهْتِمَامِ عَنْ تَعَاهُدِ فُرُوضِكَ ، واسْتِعْمَالِ سُنَّتِكَ .*
  • ➓ کیونکہ میں اس مصیبت کے ہاتھوں تنگ آ چکا ہوں اور اس حادثہ کے ٹوٹ پڑنے سے دل رنج و اندوہ سے بھر گیا ہے۔
  • *فَقَدْ ضِقْتُ لِمَا نَزَلَ بِي يَا رَبِّ ذَرْعاً ، وامْتَلأْتُ بِحَمْلِ مَا حَدَثَ عَلَيَّ هَمّاً ،*
  • جس مصیبت میں مبتلا ہوں اس کے دور کرنے اور جس بلا میں پھنسا ہوا ہوں اس سے نکالنے پر تو ہی قادر ہے، اپنی قدرت کو میرے حق میں کار فرما کر ۔
  • اگرچہ تیری طرف سے میں اس کا سزا وار نہ قرار پا سکوں ۔ اے عرش عظیم کے مالک۔
  • *وأَنْتَ الْقَادِرُ عَلَى كَشْفِ مَا مُنِيتُ بِه ، ودَفْعِ مَا وَقَعْتُ فِيه ،فَافْعَلْ بِي ذَلِكَ وإِنْ لَمْ أَسْتَوْجِبْه مِنْكَ ، يَا ذَا الْعَرْشِ
  • دوا منگوانے کے لئے رابطہ نمبر
  • ☎️03445013241
  • ☎️+989384313709
  • http://ahlebaitstore.com|
  • http://tibahlebait.com/
  • https://chat.whatsapp.com/FxrR0p1cxUf9rB17aLHknR

تمام مشکلات اور بیماریوں کا علاج

  1.                    💠 *تمام مشکلات کے لیئے جامع دعا 💠*👈رسول خدا صل الله علیه و آله و سلم نے حضرت فاطمه زهراء                  سلام اللہ علیھا سے فرمایا:
  2. اے میری دختر ! آیا چاھتی ھو ایک ایسی دعا تمھیں تعلیم دوں که کسی نے بھی اس کو نھی پڑھا مگر یہ کہ اس کی دعا قبول ھوئی ھو اور کوئی جادو اس پر(دعا پڑھنے والے پر) مؤثر نہ ہو اور کوئی بھی دشمن تمھیں سرزنش کرنے پر قادر نہ ہو اور شیطان تم سے دور ھوگا اور خدای مهربان تم سے منه نھی پھیرے گا اور تمھارا قلب مضطرب نہ ھوگا اور تمھاری دعا رد نھی ھوگی اور تمھاری ساری حوائج پوری
  3.                                                                             ھونگی
  4. جواب دیا : بابا جان یہ ( دعا ) میرے لئے دنیا اور جو کچھ      اس میں ھے، اس سے زیادہ پسندیدہ ھے
    👈 فرمایا: وہ دعا یہ ھے:
  5. يَا أَعَزَّ مَذْكُورٍ وَ أَقْدَمَهُ قِدَماً فِي الْعِزِّ وَ الْجَبَرُوتِ يَا رَحِيمَ كُلِّ مُسْتَرْحِمٍ وَ مَفْزَعَ كُلِّ مَلْهُوفٍ إِلَيْهِ يَا رَاحِمَ كُلِّ حَزِينٍ يَشْكُو بَثَّهُ وَ حُزْنَهُ إِلَيْهِ يَا خَيْرَ مَنْ سُئِلَ الْمَعْرُوفُ مِنْهُ وَ أَسْرَعَهُ إِعْطَاءً يَا مَنْ يَخَافُ الْمَلَائِكَةُ الْمُتَوَقِّدَةُ بِالنُّورِ مِنْهُ أَسْأَلُكَ بِالْأَسْمَاءِ الَّتِي يَدْعُوكَ بِهَا حَمَلَةُ عَرْشِكَ وَ مَنْ حَوْل عَرْشكَ بِنُورِكَ يُسَبِّحُونَ شَفَقَةً مِنْ خَوْفِ عِقَابِكَ وَ بِالْأَسْمَاءِ الَّتِي يَدْعُوكَ بِهَا جَبْرَئِيلُ وَ مِيكَائِيلُ وَ إِسْرَافِيلُ إِلَّا أَجَبْتَنِي وَ كَشَفْتَ يَا إِلَهِي كُرْبَتِي وَ سَتَرْتَ ذُنُوبِي يَا مَنْ أَمَرَ بِالصَّيْحَةِ فِي خَلْقِهِ فَإِذا هُمْ بِالسَّاهِرَةِ مَحْشُورُونَ وَ بِذَلِكَ الِاسْمِ الَّذِي أَحْيَيْتَ بِهِ الْعِظَامَ وَ هِيَ رَمِيمٌ أَحْيِ قَلْبِي وَ اشْرَحْ صَدْرِي وَ أَصْلِحْ شَأْنِي يَا مَنْ خَصَّ نَفْسَهُ بِالْبَقَاءِ وَ خَلَقَ لِبَرِيَّتِهِ الْمَوْتَ وَ الْحَيَاةَ وَ الْفَنَاءَ يَا مَنْ فِعْلُهُ قَوْلٌ وَ قَوْلُهُ أَمْرٌ وَ أَمْرُهُ مَاضٍ عَلَى مَا يَشَاءُ أَسْأَلُكَ بِالاسْمِ الَّذِي دَعَاكَ بِهِ خَلِيلُكَ حِينَ أُلْقِيَ فِي النَّارِ فَدَعَاكَ بِهِ فَاسْتَجَبْتَ لَهُ وَ قُلْتَ‏ يا نارُ كُونِي بَرْداً وَ سَلاماً عَلى‏ إِبْراهِيمَ‏ وَ بِالاسْمِ الَّذِي دَعَاكَ بِهِ مُوسَى‏ مِنْ جانِبِ الطُّورِ الْأَيْمَنِ‏ فَاسْتَجَبْتَ لَهُ وَ بِالاسْمِ الَّذِي خَلَقْتَ بِهِ عِيسَى مِنْ رُوحِ الْقُدُسِ وَ بِالاسْمِ الَّذِي تُبْتَ بِهِ عَلَى دَاوُدَ وَ بِالاسْمِ الَّذِي وَهَبْتَ بِهِ لِزَكَرِيَّا يَحْيَى وَ بِالاسْمِ الَّذِي كَشَفْتَ بِهِ عَنْ أَيُّوبَ الضُّرَّ وَ تُبْتَ بِهِ عَلَى دَاوُدَ وَ سَخَّرْتَ بِهِ‏ لِسُلَيْمانَ الرِّيحَ‏ تَجْرِي بِأَمْرِهِ‏ و الشَّياطِينَ‏ وَ عَلَّمْتَهُ مَنْطِقَ الطَّيْرِ وَ بِالاسْمِ الَّذِي خَلَقْتَ بِهِ الْعَرْشَ وَ بِالاسْمِ الَّذِي خَلَقْتَ بِهِ الْكُرْسِيَّ وَ بِالاسْمِ الَّذِي خَلَقْتَ بِهِ الرُّوحَانِيِّينَ وَ بِالاسْمِ الَّذِي خَلَقْتَ بِهِ الْجِنَّ وَ الْإِنْسَ وَ بِالاسْمِ الَّذِي خَلَقْت بِهِ جَمِيعَ الْخَلْقِ وَ بِالاسْمِ الَّذِي خَلَقْتَ بِهِ جَمِيعَ مَا أَرَدْتَ مِنْ شَيْ‏ءٍ وَ بِالاسْمِ الَّذِي قَدَرْتَ بِهِ عَلَى كُلِّ شَيْ‏ءٍ أَسْأَلُكَ‏ بِحَقِّ هَذِهِ الْأَسْمَاءِ إِلَّا مَا أَعْطَيْتَنِي سُؤْلِي وَ قَضَيْتَ حَوَائِجِي يَا كَرِيمُ
    🌸🌸🌸🌸🌸
    ****
    https://telegram.me/urduteb
    دوا منگوانے کے لئے رابطہ نمبر
    03445013241
    +989384313709

    Tibahlebait


    https://chat.whatsapp.com/FxrR0p1cxUf9rB17aLHknR

سیب کے زریعے وباء کا علاج

🍎 سیب کے زریعے وباء کا علاج
کہا جاتا ہے کہ ایک سیب روزانہ کھانے کی عادت ڈاکٹر کو دور رکھتی ہے جس کو طبی سائنس
درست مانتی ہے
 اسیطرح یونانی اطبا کا قول ہے: جس گھر میں سیب جاتا ہے وہاں حکیم نہیں جا سکتا۔ سیب ایک نہایت صحت بخش اور طاقت افزا غذا ہے۔ اس کے مسلسل استعمال سے صحت و شباب کو چار چاند لگ جاتے ہیں۔ روزانہ نہار منہ سیب خون کی کمی کو پورا کر دیتا ہے۔ بدن سے زہریلے مواد کو خارج کرنے اور انفیکش کو دور کرنے کے لئے بہترین علاج ہے ۔ الغرض سیب کے بے شمار فوائد ہیں ہم یہاں فقط چونکہ آجکل کرونا وائرس کی وباء پھیلی ہوئی ہے تو آپ کی خدمت میں ان ھستیوں کے ارشادات نقل کرتے ہیں جو علم کا دروازا اور عترت اھل بیت علیھم السلام کہ جن سے تمسک کر کے دنیا اور آخرت کی کامیابی حاصل کی جا سکتی ہے ۔ مشرق و مغرب چلے جائیں حقیقی علاج آپ کو اھل بیت علیھم السلام کے دروازے سے ہی ملے گا۔
🔰 امام صادق علیہ السلام 🔰
التُّفَّاحُ يُفَرِّجُ الْمَعِدَةَ وَ قَالَ كُلِ التُّفَّاحَ فَإِنَّهُ يُطْفِئُ الْحَرَارَةَ وَ يُبَرِّدُ الْجَوْفَ وَ يَذْهَبُ بِالْحُمَّى وَ فِي
حَدِيثٍ آخَرَ يَذْهَبُ بِالْوَبَاءِ .
سیب معدہ کو وسعت دیتا ہے، نیز فرمایا : سیب کھائیں کیونکہ حرارت کو کم کرتا ، اندرون کو سرد
اور بخار کو ختم کرتا ہے۔
ایک دوسری حدیث میں ہے وباء کو ختم کرتا ہے۔
📚 المحاسن، ج 2، ص 551، ح 889
🔰امام کاظم علیہ السلام 🔰
زیاد بن مروان سے نقل ہوا : أَصَابَ النَّاسَ وَبَاءٌ بِمَكَّةَ فَكَتَبْتُ إِلَى أَبِي الْحَسَنِ ع فَكَتَبَ إِلَيَّ كُلِ
التُّفَّاحَ.
مکہ میں لوگ وباء میں گرفتار ہوئے۔ میں نے امام موسی کاظم علیہ السلام کو خط لکھا ۔ انھوں نے
میرے جواب میں لکھا: سیب کھاو۔
📚 الکافی، ج 6، ص 356، ص 355

🔰امام کاظم علیہ السلام 🔰
یوسف کندی کہتا ہے : أَصَابَ النَّاسَ وَبَاءٌ وَ نَحْنُ بِمَكَّةَ فَأَصَابَنِي فَكَتَبْتُ إِلَى أَبِي الْحَسَنِ ع فَكَتَبَ إِلَيَّ
كُلِ التُّفَّاحَ فَأَكَلْتُهُ فَعُوفِيتُ ۔
لوگ وباء میں گرفتار ہوئے اور ہم مکہ میں تھے ہم بھی وباء میں مبتلا ہو گئے میں نے امام کاظم علیہ السلام کو خط لکھا ۔ انہوں نے میری طرف لکھا کہ سیب کھاو ۔ میں نے سیب کھائے اور شفا حاصل
کی۔
📚 المحاسن، ج 2، ص 553، ح 897
تحریر: حکیم قاسم یزدانی
رابطہ نمبر
03445013241
+989384313709

Tibahlebait


https://chat.whatsapp.com/FxrR0p1cxUf9rB17aLHknR